سرکاری وسائل کا بے جا استعمال،ن لیگیوں کیساتھ سابق نگران وزیراعظم ناصر الملک بھی پھنس گئے ، عدالت سے بڑی خبر آگئی

لاہور(نیوز ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ میں سابق نگران وزیراعظم ناصرالملک کے سوات کے نجی دورے کے لیے سرکاری اخراجات کے استعمال کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا گیا۔ جمعرات کو لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مامون رشید شیخ نے بیرسٹر جاوید اقبال جعفری کی درخواست پر سماعت کی اور فریقین کے وکلا کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کیا۔درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ سابقنگران وزیراعظم نے ریاستی ذمہ داری کی بجائے ذاتی امور کے لئے پروٹوکول استعمال کیا اور اپنے اختیارات سے تجاوز کیا۔درخواست گزار کا کہنا تھا کہ سابق نگران وزیراعظم نے اپنی آبائی رہائش

گاہ سوات میں 22 گاڑیوں کا کانوائے استعمال کیا اور پروٹول کا استعمال کر کے قومی خزانے کو نقصان پہنچایا گیا۔درخواست گزار نے استدعا کی کہ عدالت پروٹوکول کے معاملے کا نوٹس لے اور اضافی اخراجات واپس لینے کا حکم دے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.