پاکستان میں44 فیصد بچے کس چیز کے استعمال سے سست نشوونما کا شکار ہیں، یونیسف کی رپورٹ میں انتہائی تشویشناک انکشافات

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) بچوں کی ہنگامی امداد کے بارے میں اقوام متحدہ کے عالمی ادارے(یونیسف) نے کہا ہے کہ پاکستان میں44 فیصد بچے خشک دودھ کے استعمال سے سست نشوونما کا شکار ہیں، مارکیٹنگ کی عالمی عدالت نے دو سال سے کم عمر بچوں کے لئے خشک دودھ کی تشہیر ممنوع کررکھی ہے۔ ایک بیان میں بچوں کیہنگامی امداد کے بارے میں اقوام متحدہ کے عالمی ادارے(یونیسف)کی پاکستان میں نمائندہ انجیلا کیرنی نے کہا ہے کہ پاکستان میں44 فیصد بچے خشک دودھ کے استعمال سے سست نشوونما کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مارکیٹنگ کی عالمی عدالت نے دو
سال سے کم عمر بچوں کے لئے خشک دودھ کی تشہیر ممنوع کررکھی ہے۔

یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.