سعودی نوجوان کی نرس کیساتھ انتہائی خوفناک حرکت،لہولہان کرڈالا،ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوتے ہی کہرام برپا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی عرب کے ایک ہسپتال میں نسخے کے بغیر ادویات نہ دینے پر سعودی شہری نے کاﺅنٹر پر کھڑے فلپائنی میل نرس پر چھری سے حملہ کردیا اورا س کے بازو پر متعدد وار کرکے اسے بری طرح زخمی کردیا۔عالمی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ 17مئی کے روز اس وقت پیش آیا جب 29 سالہ رولانڈو مینا سٹاف ڈیسک پر کھڑا اپنے کام میں مصروف تھا۔ واقعے کی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہےکہ 23 سالہ سعودی شخص ایک دو بار کاﺅنٹر کے گرد چکر لگاتا ہے اور پھر رولانڈو پر حملہ آور ہوجاتا ہے اور اس

کے بازو پر چھری سے متعدد وار کرتا ہے۔متاثرہ فلپائنی نرس کا کہنا تھا مجھے سمجھ نہیں آئی کہ اچانک یہ کیا ہوا۔ مجھے محسوس ہوا کہ شاید وہ مجھے مکا مارنے کی کوشش کررہا ہے لیکن پھر مجھے اپنے بازو میں شدید تکلیف محسوس ہوئی اور میں نے خون بہتا دیکھا۔ میں اپنے ساتھیوں کا شکرگزار ہوں جو فوری میری مدد کے لئے آئے اورمجھے بچایا۔۔پولیس کی حراست میں موجود جنونی ملزم کا کہنا ہے کہ رولانڈو نے اسے نسخے کے بغیر ادویات دینے سے انکار کردیا تھا جس پر وہ مشتعل ہوگیا اور اس پر حملہ کردیا۔ ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ قانون اور اصول کا معاملہ ہے کہ ڈاکٹر کے لکھے ہوئے نسخے کے بغیر کسی بھی شخص کو ادویات نہیں دی جاسکتیں۔ انتظامیہ نے نرس پر حملے کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے ملزم کے خلاف سخت ترین کارروائی کا مطالبہ بھی کیا ہے۔واضح رہے کہ دنیا بھر سے کئی ہزار افراد سعودی عرب میں میڈیکل کے شعبے سے وابستہ ہیں ۔
یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.