کھلاڑیو خوشی سے جھوم اٹھو : جنوری 2018ء میں حکومت کا خاتمہ اور اسمبلیاں ٹوٹ جائیں گی ۔۔۔ عمران خان اگلے وزیراعظم ہوں گے ، پکی پیش گوئی کردی گئی

کھلاڑیو خوشی سے جھوم اٹھو : جنوری 2018ء میں حکومت کا خاتمہ اور اسمبلیاں ٹوٹ جائیں گی ۔۔۔ عمران خان اگلے وزیراعظم ہوں گے ، پکی پیش گوئی کردی گئی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئیر صحافی چوہدری غلام حسین نے کہا کہ طاہر القادری تیس دسمبرکو آل پارٹیز کانفرنس کر رہے ہیں جس کے بعد اکتیس دسمبر کو پیر حمید الدین سیالوی کا اجتماع ہو رہا ہے اور 31 دسمبر کو ہی پاکستان عوامی تحریک اپنی ڈید لائن کا اعلان کریں گی۔

چار جنوری کو شہدا کے چہلم ہو رہے ہیں اور سب سے بڑی اطلاع یہ ہے کہ آٹھ جنوری میں پورے ملک میں دھرنے شروع ہو جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ان دھرنوں میں موجودہ حکومتوں کی رخصتی شامل ہے، 8 جنوری کے بعد ملک بھر میں دھرنوں کا سلسلہ شروع ہو گا جس کے بعد حکومتیں ختم اسمبلیاں برخاست اور ملک الیکشن کی طرف چلا جائے گا۔ صوبہ سندھ میں اکیلی پیپلز پارٹی حکومت کرے گی، بلوچستان میں پی ٹی آئی پیپلز پارٹی مل کر کامیاب ہوں گے۔کے پی میں پی ٹی آئی کی مضبوط حکومت ہو گی۔ نواز شریف کی پارٹی اکثریت لے کر اسمبلیوں میں آئے گی لیکن اندازے کے مطابق مرکز میں پی ٹی آئی کی حکومت ہو گی۔ جبکہ دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی خصوصی طیارے کے ذریعے سعودی عرب روانگی سے متعلق چہ مگوئیاں جاری ہیں اور ہر کوئی اپنے اپنے تئیں اندازے لگانے کی کوششوں میں مصروف ہیں تاہم سینئر صحافی و تجزیہ کار چوہدری غلام حسین نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا ہے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے چوہدری غلام حسین نے کہا کہ ”ٹرمپ کے داماد نے شیخ سعید اور مختلف سینیٹرز کو ڈال کر محمد بن سلمان کو سفارش کروائی ہے کہ ان کی سنیں جس پر

سعودی عرب کے سفیر نے یہ تجویز دی کہ شہباز شریف کو بلا کر ان سے ملاقات کر لی جائے۔ اس وقت چونکہ نواز شریف نے انہیں وزارت عظمیٰ کا امیدوار نامزد کیا ہے، اگرچہ اس میں کوئی سنجیدگی ہے اور نہ ہی نواز شریف اس میں سنجیدہ ہیں، معذرت کیساتھ یہ کہہ رہا ہوں کیونکہ ان کا ماضی یہی کہتا ہے کہ نواز شریف اس معاملے میں شہباز شریف کو چکر دیں گے۔ سعودی عرب نے تو اب کرپشن کرنے والے شہزادوں کو چکی میں پیسنا شروع کر دیا ہے اور ان لوگوں کو بھی جنہوں نے سعودی عرب میں ان شہزادوں کیساتھ مل کر کرپشن اور لوٹ مار کی ہے۔ شہزادے پکڑے جا چکے ہیں اور اب آگے یہ ہے کہ تفتیش میں کافی جگہ پر انگلیاں اٹھی ہیں، اس میں شریف فیملی بھی ہے اور حریری فیملی بھی ہے جبکہ یورپ اور امریکہ کے کئی لوگ بھی شامل ہیں۔ سعودی عرب نے 10 جنوری 2018ءتک ان لوگوں کی ایک فہرست جاری کرنی ہے جنہوں نے شہزادوں کیساتھ مل کر کرپشن کی اور اس میں شریف فیملی بھی شامل ہے۔ ان تمام لوگوں کی فہرست دینی ہے کہ انہوں نے اتنے بلین ڈالر کی ڈاکہ زنی کی ہے تو وہ راکھے ہیں یا ان سب کو پکڑ کر یہاں بند کریں۔ اب سعودی عرب والے کہتے ہیں کہ اگر شہباز شریف وزیراعظم بن گئے تو ہم راہ و رسم قائم رکھتے ہیں، باقی حقائق تو وہ ہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.