برطانیہ میں تعلیم حاصل کرنے کے خواہشمند پاکستانی نوجوانوں کے لیے خوشخبری ۔۔۔۔برطانوی حکومت نے شاندار پالیسی متعارف کروا دی

برطانیہ میں تعلیم حاصل کرنے کے خواہشمند پاکستانی نوجوانوں کے لیے خوشخبری ۔۔۔۔برطانوی حکومت نے شاندار پالیسی متعارف کروا دی

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک )برطانیہ نے غیر ملکی طلبا کے لئے نئی ویزا پالیسی بنالی جس کے تحت بیرون ملک سے آئے طلبہ تعلیم مکمل ہوتے ہی ویزے کو ورک ویزے میں تبدیل کراسکیں گے۔برطانیہ کی جانب سے بنائی گئی نئی ویزا پالیسی کے تحت اب بیرون ملک سے تعلیم حاصل کرنے کے لئے آنے والے طلبا تعلیم مکمل ہونے سے چند ماہ قبل ہی ورک ویزا کے لئے درخواست دے سکتے ہیں۔

اس سے قبل ایسے طالبعلموں کو ورک ویزا کے لئے ڈگری ملنے کا انتظار کرنا پڑتا تھا تاہم نئی پالیسی کے تحت ایسا نہیں ہوگا۔غیر ملکی طالبعلموں کے لئے نئی پالیسی کا اطلاق 11 جنوری 2018 سے ہوگا جس کے بعد برطانیہ میں زیرتعلیم غیر ملکی طالبعلم اپنی تعلیم مکمل کرنے سے پہلے ورک ویزا کی درخواست دے سکیں گے۔خیال رہے کہ میئر لندن صادق خان نے بھارت اور پاکستان کے اپنے حالیہ دورے کے موقع پر طالبعلموں کو برطانیہ میں داخلوں پر زور دیا تھا۔جب کہ انہوں نے نئی پالیسی کی حمایت کی تھی اور برطانیہ جا کر انہوں نے بیرون ملک سے برطانیہ آنے والے طالبعلموں کی تعداد میں کمی کی جانب توجہ دلائی تھی۔ دوسری جانب جدہ (محمد اکرم اسد)سعودی عرب میں وزارت محنت و سماجی بہبود کی طرف سے غیر ملکی کارکنان کے ورک پرمٹ سے متعلق مالیاتی فیصلے کا طریقہ کار جاری کردیا گیا۔ وزارت محنت و سماجی بہبود کے جاری کردہ قواعد و ضوابط کے مطابق ہر غیر ملکی کارکن سے ایک برس کے ورک پرمٹ کی فیس 100ریال وصول کی جائیگی۔ علاوہ ازیں نئی فیس مالیاتی سال کے اصول کے مطابق وصول کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق اب طے کیا گیا ہے کہ یکم جنوری 2018ء سے ایسے اداروں سے جہاں غیر ملکیوں کی تعداد سعودیوں کی تعداد سے کم ہوگی ،ان سے سالانہ فی غیر ملکی کارکن 3600ریال وصول کئے جائیں گے جبکہ سعودیوں کی تعداد کم اور غیر ملکیوں کی تعداد زیادہ ہونے کی صورت میں فی غیر ملکی کارکن سالانہ 4800ریال لئے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.