atom

2017 میں 25ایٹمی میزائلوں کے تجربے کرنے والا یہ واحد ملک اب پورے امریکہ کا نقشہ بھی مٹا سکتا ہے۔۔۔سی آئی اے نے اعتراف کر لیا

پیانگ یانگ (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ نے دنیا بھرمیں اپنی جارح مزاجی اور توسیع پسندانہ عزائم کی ہیبت قائم کر رکھی ہے لیکن ایک ایشیائی ملک ایسا ہے جس نے ٹرمپ گردی کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے ایک ہی سال کے عرصے میں اپنی دفاعی صلاحیتوں کو ایسا بنا دیا ہے کہ خود امریکی اہم شخصیات اپنے بیانات اور تبصروں سے اپنے اندر چھپا ہوا خوف اور

ڈر ظاہر کررہی ہیں ۔ یہاں تک کہ بات تیسری جنگ عظیم کی بحث تک جا پہنچی ہے۔ ایک ویب سائٹ ڈیلی سٹار نے اپنے رپورٹ میں سابق سی آئی اے آفیشل سومی ٹیر ی کا بیان شائع کیا ہے جس میںانھوںنے شمالی کوریا کو امریکہ کےلئے مسلسل بڑھتا ہوا خطرہ قرار دے دیا ہے۔ سومی ٹیری نے کہاہے کہ سال 2017شمالی کوریا کےلئے بھرپور کامیابی کا سال رہا جس نے اپنی جوہری صلاحیت کو 95فیصد تک بہتر بنالیا ہے۔ صرف ایک سال میں شمالی کوریا کی جانب سے ایٹمی میزائلوں کے 25تجربات کیے گئے ہیں۔ جن میں سے ایک بین البراعظمی میزائل کا تجربہ بھی شامل ہے۔ جو کسی بھی امریکی علاقے کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتاہے۔ اور بالخصوص شمالی کوریا کا تیار کردہ ہائیڈروجن بم امریکہ کو ملیامیٹ کر دینے کےلئے کافی ہے۔شمالی کوریا کو اپنے ایٹمی پروگرام کی پرفیکشن کےلئے صر ف ایک اور قدم آگے بڑھنا ہے اور پھر وہ بڑی آسانی امریکہ کو ایٹمی حملے میں فنا کرڈالنے کےلئے دھمکاسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.