saad

بابوں کو چاہئے کہ وہ بابے کا کردار ادا کریں،بابوں کی عزت نہ کرنے والا معاشرہ آگے نہیں بڑھ سکتا

لاہور(این این آئی ) وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ پاکستان میں ایک سے بڑھ کر ایک قابل جج موجود ہے لیکن بابوں کو بھی چاہئے کہ وہ بابے کا کردار ادا کریں،ہم محاذ آرائی کی سیاست نہیں کرتے ہمارے خلاف منفی پروپیگنڈا بند کیا جائے ،ایک دوسرے کے گریبان پر ہاتھ ڈالنے سے مسئلہ حل نہیں ہوگا بلکہ تلخی بڑھے گی ،چند افراد کے فیصلے سے ملک کی تقدیر نہیں بدلے گی۔ان خیالات کااظہارانہوں نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی سالگرہ کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔خواجہ سعد رفیق نے کہاکہ 25دسمبر
کا دن پاکستانیوں کیلئے اہم دن ہے کیونکہ اسی دن قائداعظم کا یوم ولادت ہے اور نواز شریف کا بھی یوم ولادت ہے۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ایک دوسرے کے گریبان پر ہاتھ ڈالنے سے مسئلہ حل نہیں ہوگا بلکہ تلخی بڑھے گی۔ انہوں نے کہاکہ ہم عدلیہ کا احترام کرتے ہیں، پاکستان میں ایک سے بڑھ کر ایک قابل جج موجود ہے، یہ بابے ہیں اور بابوں کی عزت نہ کرنے والا معاشرہ آگے نہیں بڑھ سکتا۔ بابوں کو بھی چاہئے کہ وہ بابوں کی طرح پیش آئیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم محاذ آرائی کی سیاست نہیں کرتے ہمارے خلاف منفی پروپیگنڈا بند کیا جائے اور کسی فیصلے پر بات کرنا ہمارا بنیادی حق ہے اور نواز شریف کے خلاف فیصلے نے تو جمہوریت کی بنیادوں کو ہلا کر رکھ دیا ہے،چند افراد کے فیصلے سے ملک کی تقدیر نہیں بدلے گی۔انہوں نے کہاکہ تین بارعوام نے مسلم لیگ (ن) کواقتداردلایامگرعوام کے فیصلوں کامذاق اڑایاگیا۔سعدرفیق نے کہاکہ ہم نے نوازشریف کیساتھ عدلیہ کی آزادی کی جنگ لڑی اور ان کی بحالی کیلئے جان ہتھیلی پر رکھ کر گھروں سے نکلیاور اگر اس وقت ہم گوجرانوالہ سے گجرات چلے جاتے تو پنجاب حکومت بھی بحال ہوجاتی لیکن ساری قوم گواہ ہے ہم نے اپنے مینڈیٹ سے کبھی تجاوز نہیں کیا۔انہوں نے کہاکہ دھرنوں کی سیاست ملک کو آگے نہیں لے کر جائے گی، جمہوریت کو چلنے دیا جائے۔انہوں نے کہاکہ پڑوسی ممالک ترقی کرگئے مگرہم ایک دوسرے کے گریبانوں میں ہاتھ ڈالتے رہے ایک دوسرے کے گریبان پر ہاتھ ڈالنے سے مسئلہ حل نہیں ہوگا بلکہ تلخی بڑھے گی ۔ انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ (ن) آئین کی حکمرانی کیلئے جدوجہد کررہی ہے اورپاکستان میں جمہوری اصولوں کی پاسداری کرنا ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ وقت آگیا ہےکہ ایک دوسرے کے ساتھ مل کر مسائل حل کیے جائیں۔ انہوں نے کہاکہ ایسے لوگ کم ہیں جنھوں نے تاریخ اور جغرافیہ بدلاجبکہ قائد اعظم نے بے سروسامانی اور مشکلات کا سامنا کیااورتاریخ کا دھارابدل ڈالا۔ انہوں نے کہاکہ 25دسمبر کادن جمہوریت سے عشق کرنے والوں کیلئے خوشی کا دن ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.