بریکنگ نیوز: نواز شریف کو بڑا دھچکا، اہم (ن) لیگی رہنما نے استعفے کا اعلان کر دیا

بریکنگ نیوز: نواز شریف کو بڑا دھچکا، اہم (ن) لیگی رہنما نے استعفے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ن )کے رکن قومی اسمبلی شہاب الدین خان نے واضح کیا ہے کہ آئندہ جمعہ تک فاٹا اصلاحات بل اسمبلی میں پیش نہ ہوا تو میں سپیکر قومی اسمبلی کو اپنا استعفیٰ پیش کردوں گا۔جمعرات کو پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارے ساتھ وعدہ ہوا تھا کہ آج فاٹا اصلاحات بل کو قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا،

مگر افسوس ہے کہ ایسا نہیں ہوا، آج قومی اسمبلی کے فلور پر استعفیٰ دینا تھا لیکن مجھے بات کرنے کا موقع نہیں دیا گیا، جو لوگ کل فاٹا سپریم کونسل کے نام پر آئے تھے وہ ایک پارٹی کے ارکان تھے۔انہوں نے کہا کہ آئندہ جمعہ تک فاٹا اصلاحات بل اسمبلی میں پیش نہ ہوا تو میں سپیکر قومی اسمبلی کو اپنا استعفیٰ پیش کروں گا۔ آج قومی اسمبلی میں لوگ کہتے ہیں کہ آپ پاکستانی نہیں ہیں یعنی ہمارے پاکستانی ہونے پر سوال اٹھائے جارہے ہیں کہ ہم کون ہیں اور ہمارا سٹیٹس کیا ہے۔شہاب الدین نے کہا کہ اگلے جمعہ تک فاٹا اصلاحات بل اسمبلی میں پیش نہ ہوا تو میں اسپیکر کو اپنا استعفیٰ پیش کردونگا۔ فلور پر لوگ کہتے ہیں کہ آپ پاکستانی نہیں ہو آج ہمارے پاکستانی ہونے پر سوالیہ نشان بن رہے ہیں ہم کیا ہیں ہمارا سٹیٹس کیا ہے میں مولانا فضل الرحمن کو جانتا ہوں اور وہ مجھے جانتے ہیں میں ان سے دس گنا زیادہ بہتر سپریم کونسل بنا سکتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ دشمنوں کو کھلا راستہ دیا جارہا ہے۔ قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب خان شیرپاؤنے کہا ہے کہ نواز شریف کے اتحادی فاٹا اصلاحات نہیں ہونے دے رہے جو فاٹا کے عوام کے ساتھ زیادتی ہے،

جب سے ٹرمپ آیا ہے اس کی پالیسیوں کا پتہ نہیں چل رہا کہ وہ کیا کرنا چاہ رہا ہے‘ ہر ملک ان کی امداد کا طلب گار نہیں ہے۔پارلیمنٹ ہاؤ س کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آفتاب شیرپاؤ نے کہا کہ نواز شریف کے اتحادی فاٹا اصلاحات نہیں ہونے دے رہے۔ جو فاٹا کے عوام کے ساتھ زیادتی ہے ہم نے اپنا پریشر اور دباؤ جاری رکھنا ہے ہم نے فاٹا کو خیبرپختونخوا میں لان ا ہے ہم فاٹا میں لوکل باڈیز کے الیکشن چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب سے ٹرمپ آیا ہے اس کی پالیسیوں کا پتہ نہیں چل رہا کہ وہ کیا کرنا چاہ رہا ہے ہر ملک ان کی امداد کا طلب گار نہیں ہے۔ وزیر مملکت سیفران غالب خان نے کہا ہے کہ فاٹا کے 9 ارکان پارلیمنٹ حکومت کے فیصلے کے ساتھ ہیں صرف دو ایم این ایز اپنے حلقے کے لئے راتوں رات فیصلے مانگتے ہیں۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے غالب خان نے کہا کہ عمران خان نے مشرف کو ہار پہنائے تھے جبکہ پیپلز پارٹی نے صدارت کے بدلے میں مشرف کو فری ہینڈ دیا۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا اصلاحات کے معاملے پر فاٹا کے 9ایم این ایز اور سینیٹرز حکومت کے فیصلے کے ساتھ ہیں صرف دو ایم این ایز اپنے حلقے کے لئے راتوں رات فیصلے مانگتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.