tiyaray

چینی جنگی طیاروں کی جاپانی سمندر پر پروازیں‘ جنوبی کورین طیارے حرکت میں آگئے

بیجنگ (آئی این پی ) چینی ایئر فورس نے جاپانی سمندرپر اپنی طویل فاصلے کی مشقیں جاری رکھیں جس سے جنوبی کورین جیٹ طیاروں نے بھی پھرتی دیکھنے میں آئی ، چینی مشقوں کے باعث جو اس نے چینی تائیوان کے گرد کیں ، ایک بار پھر علاقے میں کشیدگی کے آثاردکھائی دینے لگے ہیں، چین نے تائیوان کے اوپر حالیہ مہینوں میں کئی بار پروازیں کر کے اپنے حریفوں کو چیلنج کیا ہے۔رائٹر کے مطابق چینی ایئرفورس نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کے جنگی اور بمبارطیارے توشیما خلیج کے اوپر سے گزرتے رہے جو جنوبی

کوریا اور جاپان کو جداکرتی ہے ، جاپانی سمندر چین کی ملکیت نہیں ہے اس لئے یہ مشقیں قانونی اور ذمہ دارانہ تھیں ، چینی جنگی طیارو ں میں ایچ 6بمبار ، 2جے ۔11جنگی جیٹ طیارے اور ٹی یو ۔154طیارہ شامل تھا ۔ چینی ایئر فورس کے ترجمان شین جنکی نے اپنے بیان میں کہا کہ ان مشقو ں کی پہلے سے منصوبہ بند ی کی گئی تھی اور یہ معمول کے مطابق تھی ، سیئول میں جنوبی کوریا کے مشترکہ چیفس آف سٹاف نے کہا ہے کہ پانچ چینی فوجی طیارے کوریا کے فضائی علاقے میں داخل ہوتے ہوئے دیکھے گئے تھے جس پر جنوبی کوریا کے طیارے حرکت میں آ گئے ، چینی طیاروں نے جاپان کے دفاعی زون میں بھی پرواز کی ۔چینی ایئر فورس کے ترجمان نے بھی جنوبی کورین طیاروں کے حرکت میں آنے کا اشارہ کیا ہے تاہم چینی طیاروں نے اپنا مقصد حاصل کرلیا ہے۔جاپانی حکومت کی طرف سے ابھی تک کسی رد عمل کا اظہار نہیں کیا گیا ، تائیوان کے فوجی حلقوں کا کہنا ہے کہ چین نے اسی وقت اپنی الگ مشقیں کی تھیں جو کہ تائیوان اور فلپائن کے درمیان باشی چینل سے پرواز کرتے ہوئے گزرےاور اس کے بعد وہ اپنے تائیوان کے شمال اور جاپان کے جنوبی جزیرے کے قریب اتر گئے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.