خدا کی قسم ! عمران خان تو بہانہ ہے، نواز شریف کا اصل مقصد کیا ہے؟نامور سیاستدان نے شہباز شریف کی آنکھیں کھول دیں

خدا کی قسم ! عمران خان تو بہانہ ہے، نواز شریف کا اصل مقصد کیا ہے؟نامور سیاستدان نے شہباز شریف کی آنکھیں کھول دیں

لاہور (ویب ڈیسک) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہاکہ نواز شریف کو یہ بات لے ڈوبی ہے کہ میں آﺅٹ ہوں اور شہباز شریف ان ہے۔ انہوں نے کہا کہ جتنے دن بھی وہ ان ہیں نواز شریف کو یہ بات تنگ کرے گی،

کیونکہ ماڈل ٹاؤن کا کیس ابھی ختم نہیں ہوا۔ شیخ رشید نے کہا کہ شہباز شریف کا ان ہونا اور بچ جانا نواز شریف کے دل کو ڈس گیا ہے۔ نواز شریف یہ سوچ رہے ہیں کہ اب شہباز شریف انتخابات کی مہم چلائے گا اور میں پارٹی میں مہمان کے طور پر سمجھا جاﺅں گا۔ آپ دیکھ لینا کہ نواز شریف لڑائی کریں گے جھگڑا کریں گے ، لیکن انہیں شہبازشریف قبول نہیں ہے۔ شیخ رشید نے کہا کہ عمرا ن خان کا بہانہ ہے لیکن نواز شریف کا اصل مسئلہ شہباز شریف ہے۔جبکہ دوسری جانب وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ جاننا چاہتا ہوں کہ عمران خان اور شیخ رشید کو کون بتاتا ہے اب کس کی باری ہے، اب کسے رگڑنا ہے،انہیں اس کا جواب دینا پڑے گا‘ہم لوگوں کو چور چور نہیں کہتے، ساڑھے چار سال مسلسل سازش اور دبا کا سامنا کیا، گالیاں سنیں، بے ہودہ الزامات لگائے گئے احتساب کا گھنانا کھیل کھیلا گیا، ملک میں شفاف احتساب نہیں ہے، یہ لوگوں کو استعمال کرنے کا طریقہ ہے‘عمران خان نے بار بار کہا کہ ان کی آف شور کمپنی ہے مگر انہیں جانے دیا جس سے پتا چلتا ہے ۔

ہمارے لیے اور عمران خان کے لیے فیصلے اور طرح کے ہیں‘ جہانگیرترین کے معاملے میں جے آئی ٹی بنی نہ مانیٹرنگ جج مقررکئے ،پی ٹی آئی کو کلین چٹ پرسوالات اٹھتے ہیں نوازشریف کو تنخواہ لینے کے الزام میں نااہل قراردیاگیا،عمران خان نے تسلیم کیا کہ ان کی آف شور کمپنی ہے‘عمران خان بتائیں کاروبار کیا اور آمدنی کتنی ہے عمران خان نے یہ نہیں بتایاان کاٹیکس 2لاکھ سے اوپرکیوں نہیں ہوتا‘سپیکرقومی اسمبلی نے قبل ازوقت انتخابات کا خدشہ ظاہرکیا ہے تواس میں بڑاوزن ہے ،ایسی چیزیں چل رہی ہیں تو ا س کا تدارک ہوناچاہئے‘ انتخابات قریب ہیں اب مخالفین کی گالی گلوچ کی شدت بڑھ جائے گی لیکن الیکشن والے دن ہی فیصلہ ہوگا کہ گالی جیتی یا کارکردگی، اگر گالی جیتی تو عمران خان جیت جائیں گے اور اگر کارکردگی جیتی تو نواشریف جیتیں گے‘ ہم جن سے مد مقابل ہیں ان سے زیادہ ڈیلیور کیا، اب کوئی یہ نہیں کہہ سکتا وہ اپوزیشن میں ہے، تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کی خیبرپختونخوا میں حکومت رہی، 18 ویں ترمیم کے بعد صوبائی حکومتیں بہت طاقتور ہیں، اب تمام صوبوں کے لوگ اپنی اپنی حکومتوں سے حساب مانگیں گے۔ میڈیا سے گفتگو میں وفاقی وزیر نے کہا کہ انتخابات قریب ہیں اب مخالفین کی گالی گلوچ کی شدت بڑھ جائے گی لیکن الیکشن والے دن ہی فیصلہ ہوگا کہ گالی جیتی یا کارکردگی، اگر گالی جیتی تو عمران خان جیت جائیں گے اور اگر کارکردگی جیتی تو نواشریف جیتیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسپیکر قومی اسمبلی شریف آدمی ہیں، اگر وہ کوئی تحفظات سامنے لائے ہیں تو اس میں بڑا وزن ہے، اگر اسپیکر ایسا سوچے تو اس کا ہر سطح پر نوٹس لیے جانا چاہیے اور ایسی چیزوں کا تدارک ہونا چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.