اوورسیز پاکستانی ووٹ ڈال سکیں گے یا نہیں، چیف جسٹس کے استفسار پر سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کیا جواب دیا؟

اسلام آباد (این این آئی) اوورسیز پاکستانی ایک بار پھر ووٹ کے حق سے محروم ہوگئے، 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال نہیں کرسکیں گے۔جمعرات کو سپریم کورٹ میں تارکین وطن کے ووٹ سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ غیر مقیم پاکستانیوں کو ووٹ کی سہولت دینے کے معاملے کا کیا ہواجس پر وکیل فیصل چودھری نے بتایا کہ لگتا ہے اس الیکشن میں بھی تارکین وطن کو ووٹ کی سہولت نہیں مل سکتی، عدالت نے ووٹ کی سہولت دینے کے لیے جو اقدامات کئے وہ

قابل ستائش ہیں۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ یہ درست ہے کہ فی الحال یہ کام ممکن نہیں ہے، میری کوشش تھی کہ تارکین وطن کو یہ سہولت مل جائے، اس وقت یہ کام کرنے سے بڑے پیمانے پر نقصان ہو سکتا ہے۔سیکرٹری الیکشن کمیشن نے عدالت کو بتایا کہ تھرڈ پارٹی ایولیوایشن کے مطابق تارکین وطن کے لیے ای ووٹنگ منصوبے پر کام نہیں ہو سکتا، فی الحال بیرون ملک پاکستانیوں کو ووٹ کی سہولت حالیہ عام انتخابات میں نہیں مل سکتی، آن لائن سسٹم پر مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ٹاسک فورس کی رپورٹ کو پبلک کیا جائے، ضمنی انتخابات میں ای ووٹنگ کا جائزہ لیا جاسکتا ہے۔ عدالت نے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک کے لیے ملتوی کر دی۔ اوورسیز پاکستانی ایک بار پھر ووٹ کے حق سے محروم ہوگئے، 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال نہیں کرسکیں گے۔جمعرات کو سپریم کورٹ میں تارکین وطن کے ووٹ سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ غیر مقیم پاکستانیوں کو ووٹ کی سہولت دینے کے معاملے کا کیا ہواجس پر وکیل فیصل چودھری نے بتایا کہ لگتا ہے اس الیکشن میں بھی تارکین وطن کو ووٹ کی سہولت نہیں مل سکتی، عدالت نے ووٹ کی سہولت دینے کے لیے جو اقدامات کئے وہ قابل ستائش ہیں۔

یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.