6 مئی کومجھ پر گولی چلانے والا شخص کون تھا ؟ احسن اقبال

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء اور وزیرداخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ 6 مئی کو ایک بزدل نے مجھ پر گولی چلائی تھی، ابھی یہ جنگ جاری ہے۔ حتمی جنگ ابھی جیتنا باقی ہے،ہماری قوم تباہی اوربربادی کے مناظردیکھ کرتھک چکی تھی۔ انہوں نے آج یہاں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے کئی سال دہشتگردی اورانتہا پسندی کے شکار کے طورپرگزارے۔
ہماری قوم تباہی اوربربادی کے مناظردیکھ کرتھک چکی تھی۔ انہوں نے کہا کہ 6 مئی کو ایک بزدل نے مجھ پر گولی چلائی تھی۔ ابھی یہ جنگ جاری ہے۔ حتمی جنگ ابھی جیتنا باقی ہے۔ ہم اپنی نسلوں کو ایسا پاکستان نہیں دینا چاہتے۔ جہاں دہشتگردی اور انتہا پسندی ہو۔ احسن اقبال نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت نے دہشت گردوں کی کمر توڑ دی ہے۔ دہشتگردی کےخلاف جنگ جیتنے کے لئے باہمی اتحاد کی ضرورت ہے۔

اس سے قبل وفاقی کابینہ نے وزیر داخلہ احسن اقبال کی کابینہ اجلاس میں آمد پر ان کا پرتپاک خیر مقدم کیا۔ وفاقی کابینہ کااجلاس جمعرات کو وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت شروع ہوا تو ارکان نے وزیر داخلہ احسن اقبال کی آمد پر ان کا پرجوش استقبال کیا۔ وزیر داخلہ احسن اقبال نے دعاؤں اور نیک تمنائوں پر وفاقی کابینہ کے ارکان کا شکریہ ادا کیا۔
کابینہ ارکان نے احسن اقبال کی عمر درازی اور صحت یابی کیلئے دعا بھی کی۔ واضح رہے وزیرداخلہ احسن اقبال ناروال کی تحصیل شکرگڑھ کے گاؤں کنجرور میں قاتلانہ حملے میں شدید زخمی ہوگئے تھے۔ احسن اقبال پرحملہ اس وقت کیا گیا جب وہ ایک کارنرمیٹنگ سے خطاب کے بعد واپس روانہ ہونے لگے تھے۔وزیرداخلہ احسن اقبال پرحملہ کرنے والے ملزم عابد کوموقع پرہی گرفتار کرلیا تھا۔ ملزم نے دوران احسن اقبال پرحملہ کی تفتیش کے دوران اہم انکشافات بھی کیے۔
یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.