راناثنا اللہ کی ہٹ دھرمی ،خود کو بدلنے کی بجائے قانون کو بدلنے کا اشارہ دے دیا

اسلام آباد: راناثنا اللہ کی ہٹ دھرمی ،خود کو بدلنے کی بجائے قانون کو بدلنے کا اشارہ دے دیا۔رانا ثنا اللہ کا کہنا تھاکہ پارلیمنٹ جب چاہے آرٹیکل 62 میں تبدیلی کر کے فیصلے کا اثر ختم کر سکتی ہے۔تفصیلات کے مطابق آج سپریم کورٹ کی جانب سے 62 ون ایف کی تشریح کرتے ہوئے اس آرٹیکل کے تحت نا اہلی کو تاحیات قرار دے دیا گیا۔

اس فیصلے کے تحت سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف بھی تا حیات نا اہل ہو چکے ہیں جس کے بعد مسلم لیگ ن کی جانب سے اس فیصلے پر سخت ردعمل دیا جا رہا ہے۔رانا ثنا اللہ نے نجی ٹی وی پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ یہ آرٹیکل ہمیں یہ بتاتا ہے کہ ممبر اسمبلی کی اہلیت کیا ہونی چاہیے ۔یہ کوئی مستقل چیز نہیں ہے ،پارلیمنٹ جب چاہے اس اہلیت کے اس معیار کو تبدیل کر سکتی ہے جس کے بعد سپریم کورٹ کا فیصلہ بھی بے اثر ہو سکتا ہے۔
یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.