pmln

ختم نبوت قانون میں ترمیم کا معاملہ،مسلم لیگ (ن) کی اہم ترین شخصیت نے کس سے استعفی مانگ لیا؟؟دھماکے دار خبر

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک)حکمران جماعت کے رکن پنجاب اسمبلی محمد وحید گل نے کاغذات نامزدگی میں ختم نبوت کے حلف نامے کی اقرار نامے کے لفظ سے تبدیلی کرنے والے ذمہ داران سے چوبیس گھنٹے میں مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگرایسا نہ ہوا تو احتجاجا لاہور سے اسلام آباد ننگے پاوں مارچ کروں گا ،ذمہ داران کو نہ صرف پارٹی سے

باہر کیاجائے بلکہ ان کے خلاف مقدمات درج کرائے جائیں۔لاہور پریس کلب میں ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے رکن پنجاب اسمبلی وحید گل نے کہا کہ یہ کلیریکل غلطی نہیں ،کسی مائی کے لعل کو ختم نبوت کے قانون کو چھیڑنے کی جرات کیسے ہوئی۔ ہماری جان و مال ، ماں باپ اوراولاد نبی کریم ? کی ناموس پر قربان ہیں۔ اس اقدام سے کروڑوں مسلمانوں کی دل آزاری ہوئی ہے جس کا نوٹس لیا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ آستین کے سانپ کہیں بھی ہو سکتے ہیں او ریہ اپنے ذاتی مفادات کیلئے کہیں بھی گھس جاتے ہیں اور اپنی کارستانیاں کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم وزیر اعلی شہباز شریف کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے اس پر فوری رد عمل دیا اور مطالبہ کیا کہ ایسے لوگوں کو کابینہ اور پارٹی سے باہر نکالیں۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر قانون اور دیگر اس کے ذمہ دار ہیں۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ یہ لوگ 24گھنٹے میں مستعفی ہوں بصورت دیگر میں اس کے خلاف ننگے پاوں لاہور سے اسلام آباد کی طرف مارچ کروں گا۔ ان لوگوں کو پارٹی سے بھی نکالا جائے اور ان کے خلاف قانونی کارروائی کے لئے مقدمہ درج کرایا جائے۔ وحید گل نے پنجاب اسمبلی میں ایک قرارداد بھی جمع کر ادی ہے جس کے متن میں کہا گیا ہے کہ وفاقی حکومت نے انتخابی اصطلاحات ایکٹ 2017ئ میں فارم برائے نامزدگی کے حلف نامہ و اقرار نامہ میں جوختم نبوت کے حلف نامہ واقرار نامہ کے حوالے سے جو غلطی ہوئی تھی اس کا اعتراف کرتے ہوئے اسے دوبارہ قومی اسمبلی میں لفظ حلفیہ شامل کرنے کاقانون منظور کروانے کا جوا عادہ کیا ہے پنجاب اسمبلی کایہ نمائندہ ایوان اس امر کو خوش آئندقرار دیتا ہے۔وزیراعلی پنجاب میاں محمد شہبازشریف نے صحیح طور پر حضور نبی کریم ?کی غلامی کا حق ادا کیا ہے اور ختم نبوت ?کے خادم بن کر سامنے آئے ہیں اورانہوں نے جس طرح الحمرائ آرٹس کونسل میں ورکرز کنونشن میں صدر مسلم لیگ (ن) میاں نوازشریف کی موجودگی میں یہ مطالبہ کیا کہ ناصرف حلف نامے و اقرار نامہ میں لفظ حلفیہکو دوبارہ بحال کیا جائے بلکہ جن عناصر نے یہ گھناونا کام کیا ہے اس سازش کاپتہ لگا کر ان کوفوری طور پر پارٹی سے نکال کر باہر پھینکا جائے۔وفاقی حکومت اور صدر مسلم لیگ (ن) میاں نوازشریف سے مطالبہ ہے کہ فوری طور پر ان سازشی عناصر کا پتہ لگایا جائے اوران کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے اوران کو پارٹی سے نکال کرباہر پھینکا جائے۔یہ ایوان سمجھتا ہے کہ جن غلامان رسول ?کی اس بات سے دل آزاری ہوئی اس پر شہبازشریف صاحب کا یہ اقدام نہ صرف ان کی دلجوئی کا باعث بنے گا بلکہ اسلامی جمہوریہ پاکستان ایک بہت بڑے فتنہ سے بچ گیا اورا ن سازشی لوگوں کو بھی کان ہوں گے۔جو ختم نبوت کے قانون کے بارے میں کوئی بھی سازش کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں انشائ اللہ وہ کبھی کامیاب نہیں ہونگے۔ یہ ایوان خادم اعلی پنجاب و خادم ختم نبوت کو خراج تحسین پیش کرتا ہے اور تمام مذہبی و سیاسی اکابرین و رہنما قوم ملت کا شکریہ ادا کرتا ہے جنہوں نے اس اہم مسئلہ میں اہم کردار اداکیا اوراہم مسئلہ کو اجاگر کیا۔اللہ تعالی ان کی کاوش کو قبول فرمائے اور اس کی کوشش کاوش کو ہم سب کو حضور نبی کریم ?کی شفاعت نصیب فرمائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.